138

وزیراعظم کا 15 ماہ بعد پہلا پولیو کیس رپورٹ ہونے پراظہار تشویش،وجوہاتی رپورٹ طلب

وزیراعظم کا 15 ماہ بعد پہلا پولیو کیس رپورٹ ہونے پراظہار تشویش،وجوہاتی رپورٹ طلب
شہبازشریف نے صورتحال کی پیش نظر پولیو خاتمے کیلئے لائحہ عمل مرتب کرنے کی ہدایات بھی جاری کردیں
اسلام آباد(نامہ نگار)وزیر اعظم شہباز شریف کی جانب سے ملک میں 15 ماہ بعد پہلے پولیو کیس رپورٹ ہونے پر گہری تشویش کا اظہار کیا گیا ہے۔وزیر اعظم کی جانب سے متعلقہ حکام سے پولیو کیس کی وجوہات کی رپورٹ طلب کرلی گئی ہے۔اس صورتحال کی پیش نظر وزیراعظم نے پولیو خاتمے کے لیے لائحہ عمل مرتب کرنے کی ہدایات بھی جاری کی ہیں۔دوسری جانب پیر کے روز قومی ٹاسک فورس برائے انسداد پولیو کا اجلاس طلب کرلیا گیا ہے۔خیال رہے کہ گزشتہ روز نیشنل ہیلتھ ایمرجنسی آپریشن سینٹر کے بیان کے مطابق پاکستان میں 15 ماہ بعد پولیو کا اپہلا کیس درج کیا گیا ہے۔پولیو کے حوالے سے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وفاقی وزیر صحت عبدالقادر پٹیل نے کہا کہ بچوں کی بہترین صحت کے لیے تمام سہولیات بروئے کار لائیں گے۔اجلاس میں بتایا گیا کہ سال 2020 میں خیبرپختونخوا سے پولیو کے 22 کیسز رپورٹ ہوئے تھے جبکہ گزشتہ سال صوبہ خیبرپختونخوا سے پولیو کا کوئی بھی کیس رپورٹ نہیں ہوا تھا۔انسداد پولیو پروگرام کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ برس پولیو کے 9 کیسز رپورٹ ہوئے تھے جن میں سے بلوچستان میں 5، سندھ میں 2 جب کہ پنجاب و خیبرپختونخوا سے 1,1کیس رپورٹ ہوا تھا۔واضح رہے شمالی وزیرستان میں 15 ماہ بعد پہلا پولیو کا کیس سامنے آیا ہے جب کہ سال 2022 میں اب تک دنیا بھر سے 3 پولیو کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں