135

پی آئی اے نے پائلٹس کی تربیت کیلئے جدید اے 320 ائیر بس سمیولیٹر خرید لیا

پی آئی اے نے پائلٹس کی تربیت کیلئے جدید اے 320 ائیر بس سمیولیٹر خرید لیا
سمیولیٹر مقامی ایئر لائنز کے لیے محفوظ تربیت اور لاگت کی بچت کا سبب بنے گا،رپورٹ
کراچی(نیوز رپورٹر)پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائنز(پی آئی اے)نے پائلٹس کی تربیت، نئے داخل ہونے والوں کے لیے کورسز اور فضائی سلامتی کے لیے ائیر بس اے 320 سیمیولیٹر لے لیا۔نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سمیولیٹر مقامی ایئر لائنز کے لیے محفوظ تربیت اور لاگت کی بچت کا سبب بنے گا، ادارے کو اپنے پائلٹس کی بیرون ملک تربیت میں خاصی رقم خرچ کرنی پڑتی ہے۔سیون ای ہارس ٹیکنالوجی سے لی گئی اسٹیٹ آف دی آرٹ ڈیجیٹل سیون ای ایولیوشن ائیر بس اے 320 مکمل فلائٹ سیمیولیٹر ہے جو کراچی میں واقع پی آئی اے ٹریننگ سینٹر میں نصب کی جائے گی۔فی الحال پاکستانی ائیر لائن کی جانب سے 11 اے 320 ائیر بس طیارے استعمال کیے جارہے ہیں، سیمیولیٹر ناصرف پی آئی اے کے اپنے پائلٹس کے لیے مستفید ہوگا، بلکہ ائیر بلیو اور ائیر سیال ائیر لائنز جو طیاروں کا استعمال کرتے ہیں وہ بھی اس سے فائدہ اٹھا سکیں گے۔پاکستان میں اے320 کے 670 پائلٹس ہیں۔اسکائے ونگ کے ڈائریکٹر اور ماہر ایوی ایشن عمران اسلم خان کا کہنا ہے کہ سمیولیٹرز کی خریداری پی آئی اے کا بہترین اقدام ہے، یہ پاکستان کے تمام پائلٹس کے لیے ائیر بس اے 320 کی پرواز بھرنے میں معاون ثابت ہوگا۔انہوں نے کہا کہ ایئربس اے 320 کے پائلٹس کو ہر 6 ماہ بعد چار گھنٹے کی سمیلیٹر ٹریننگ حاصل کرنی چاہیے، اب سوال یہ ہے کہ کیا ایک سمیولیٹر سیکڑوں پائلٹس کے لیے کافی ہے۔عمران اسلم نے کیا کہ ایک پائلٹس کو سمیولیٹر کی تربیت کے لیے بیرون ملک بھیجنے میں تقریبا 400 سے 500 ڈالرز خرچ ہوتے ہیں، جبکہ انسٹریکٹر کی فیس اور دیگر اخراجات الگ ہیں، تمام تر اخراجات ائیر لائن کی جانب سے اٹھائیجاتے ہیں۔انہوں نے وضاحت دیتے ہوئے کہا کہ معاہدے کے تحت ابتدائی ایام میں طیارے بنانے والی کمپنی اپنے صارفین کو کم قیمت میں سمیولیٹر فراہم کرے گی، تاہم متعلقہ حکام کی جانب سے اس طرح کے انتظامات پر مشاورت نہیں کی گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں