124

وزیراعظم کا دورہ،سعودی عرب سے 8ارب ڈالر کا مالیاتی پیکیج ملنے کا امکان

سعودی عرب پاکستان کو موخر ادائیگیوں پر تیل کی سہولت کے لئے 2.4 ارب ڈالرزبھی فراہم کرے گا
اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب کی جانب سے پاکستان کو 8 ارب ڈالر کے مالیاتی پیکج ملنے کا امکان ہے۔ذرائع کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف کے دورہ سعودی عرب کے بعد پاکستان کو 8 ارب ڈالر کے مالیاتی پیکیج ملنے کا امکان ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل سعودی عرب میں موجود ہیں جبکہ وہ اضافی مالی پیکیج کے طریقہ کار کو حتمی شکل دیں گے۔سعودی عرب پاکستان کو موخر ادائیگیوں پر تیل کی سہولت کے لئے 2.4 ارب ڈالرز فراہم کرے گا جبکہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان 3 ارب ڈالرز کے موجودہ ڈپوزٹ کو جون 2023 تک رول اوور کرنے پر بھی اتفاق ہوگیا ہے۔ذرائع کے مطابق پاکستان کی سعودی عرب سے 2 ارب ڈالرز کے اضافی پیکیج کو ڈپوزٹ یا سکوک کے ذریعے فراہم کرنے پر بات چیت جاری ہے۔ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ سعودی عرب ممکنہ طور پر مزید رقم پاکستان کو فراہم کرے گا، مجموعی پیکیج کے حجم کا اندازہ اس وقت لگایا جائے گا جب اضافی رقم کو حتمی شکل دے دی جائے گی جبکہ مجموعی طور پر یہ رقم 8 ارب ڈالرز کے قریب ہوگی۔واضح رہے کہ وزیر اعظم شہباز شریف اپنے پہلے غیر ملکی دورے کے بعد وطن واپس پہنچ گئے ہیں۔اس دورے کے دوران انہوں نے 2 دن سعودی عرب میں قیام کیا جبکہ ایک روز انہوں نے متحدہ عرب امارات (یو اے ای)میں گزارا۔متحدہ عرب امارات کے دورے کے دوران ان کی ابوظہبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زاید آل النیہان سے ملاقات ہوئی جبکہ ملاقات میں دونوں رہنماں کے درمیان مشترکہ مفادات سمیت مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے پر غور کیا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں